ضلع خیبر نے ضم اضلاع سپورٹس فیسٹیول جیت لیا

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

پشاور(سپورٹس رپورٹر)ضلع خیبر پختونخوا نے ڈائریکٹوریٹ سپورٹس کے زیر اہتمام کھیلا گیا ضم اضلاع سپورٹس فیسٹیول جیت لیا، ضلع خیبر نے 9 ایونٹس میں پہلی پوزیشن حاصل کی، باجوڑ نے 3 گیمز میں پہلی پوزیشن حاصل کرتے ہوئے دوسری اور شمالی وزیرستان نے 2 گیمز میں پہلی پوزیشن حاصل کرتے ہوئے مجموعی طور تیسری پوزیشن حاصل کی۔ڈائریکٹرجنرل سپورٹس خالد خان نے فاتح کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کئے ، ان کے ہمراہ ڈائریکٹر سپورٹس ضم اضلاع پیر عبداﷲ شاہ ، ڈائریکٹر سپورٹس سید ثقلین شاہ ، اے ڈی ایڈمن اعوان حسین ، ایوب خان ، اے ڈی اشفاق احمد، کوچز عمران اﷲ، عامر اقبال ، ایڈمن آفیسر پشاور سپورٹس کمپلیکس سید جعفر شاہ ، سمیت دیگراہم شخصیات موجود تھیں ۔ ایک ہفتے تک جاری رہنے والے فیسٹیول میں ضم اضلاع اور سب ڈویژنوں سے ساڑھے تین ہزارکھلاڑیوںنے مختلف گیمز میں حصہ لیا۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی سپورٹس ڈائریکٹریٹ کے ڈی جی سپورٹس خالد خان نے کہاکہ خیبر پختونخوامیں کھیلوں کے فروغ کیلئے بہت کام ہواہے اور انشا اللہ مستقبل میں اس سے بڑھ کر کام ہوگا،صوبے اور ضم اضلاع میں مرد وخواتین کھیلوں کیلئے ایک جامعہ پلان تیارکیاجائیگا۔انشا اللہ کھیلوں سے وابستہ لوگ بہتر محسوس کرینگے۔ان خیالات کا اظہار ضم شدہ قبائلی اضلاع گیمزکے اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔خالد خان نے کہاکہ محکمہ کھیل مصروف ترین ادارہ ہے جہاں پر دن رات کام کرناپڑتاہے دیگر اداروں کے مقابلے میں سپورٹس میں بہت کام ہواہے اور انشا اللہ مزید کام کرنے کی ضرورت ہے ،ہماری کوشش ہوگی کہ زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو اس شعبے کی طرف لاکر انکی صلاحیتوں کو سامنے لایاجائے ،انہوںنے کہاکہ صوبے ،قومی اور انٹر نیشنل لیول پر کھیلنے والے کھلاڑیوں کو بہتر سے بہتر سہولیات مہیاکرینگے تاکہ انٹر نیشنل مقابلوں میں انکی کارکردگی نمایاں ہوں،انکاکہناتھاکہ باصلاحیت کھلاڑیوں کی قدر کی جائے گی اور ہر موڑپر صحیح معنوں میں سرپرستی ہوگی،کیونکہ یہی نوجوان اس ملک کا بہتر مستقبل ہیں انہیں آگے بڑھنے کے مواقع فراہم کرناہماری اولین ذمہ داری ہے،خیبر پختونخوامیں کھیلوں کیلئے گراس روٹس لیول پر کام ہورہاہے صوبے میں تحصیل اور اضلاع کی سطح پر گرائونڈزاور جمنازیم بنانے پر کام تیزی سے جاری ہے ان کاموں کی تکمیل سے کھیلوں کے شعبے میں انقلاب آئیگا،خالد خان نے کہاکہ خیبر پختونخومیں مردوخواتین کھلاڑیوں پر یکساں توجہ دی جائے گی،خواتین کی انڈر21گیمز کو بہترین اندازمیں کرائینگے،جبکہ اسکے ساتھ ہی ضم شدہ قبائلی اضلاع میں بھی کھیلوں کے شعبے میں صحیح منعنوں میں کام ہوگا،انہوںنے اس عزم کا اظہار کیاکہ ضم شدہ قبائلی اضلاع کے کھلاڑیوں کیلئے جلد ہی اسلام آباد میں گیمز کرائینگے ،توقع ہے کہ ان اقدامات سے خیبر پختونخوابشمول ضم شدہ قبائلی اضلاع کے اندر شعبہ کھیل میں انقلاب آئے گا۔فیسٹول میں جوڈو میں خیبر نے پہلی، کرم نے دوسری، کراٹے میں خیبر نے پہلی، کرم نے دوسری، جمناسٹک میں خیبر نے پہلی، باجوڑ نے دوسری، باکسنگ میں خیبر نے پہلی، کوہاٹ سب ڈویژن اور جنوبی وزیرستان نے دوسری، ہاکی میں خیبر نے پہلی، جنوبی وزیرستان نے دوسری، باسکٹ بال میں خیبر نے پہلی، باجوڑ نے دوسری، ٹیبل ٹینس میں خیبر نے پہلی، سب ڈویژن پشاور نے دوسری، اتھلیٹکس میں خیبر نے پہلی، باجوڑ نے دوسری، باڈی بلڈنگ میں باجوڑ نے پہلی، خیبر نے دوسری، ویٹ لیفٹنگ میں باجوڑ نے پہلی، خیبر نے دوسری، تائیکوانڈو میں جنوبی وزیرستان نے پہلی، باجوڑ نے دوسری، کبڈی میں مہمند نے پہلی، جنوبی وزیرستان نے دوسری، والی بال میں شمالی وزیرستان نے پہلی، مہمند نیدوسری، بیڈمنٹن میں باجوڑ نے پہلی، شمالی وزیرستان نے دوسری، ووشو میں جنوبی وزیرستان نے پہلی، باجوڑ نے دوسری، فٹ بال میں شمالی وزیرستان نے پہلی اور خیبر نے دوسری، کرکٹ میں خیبر نے پہلی اور باجوڑ نے دوسری پوزیشن حاصل کی۔